معاشرہ

عزیزو ! میری بات ذرا دھیان سے سننا اور اس پر غور کرنا کہ معاشرہ افراد کے مجموعے کا نام نہیں ہے بلکہ افراد کی حاصل ضرب کا نام ہے - یہ ہمارے ذاتی تعلقات کے پھیلاؤ کا نام ہے - جو کچھ ایک فرد واحد پر وارد ہوتا ہے وہ ہماری ساری سوسائٹی میں پھیل جاتا ہے - جنگوں کے اسباب اور معاشروں کے انحطاط کی وجہ افراد کے ذھنوں میں مقید ہوتی ہے - اگر ہمیں معاشرے کو تبدیل کرنا ہے تو ہمیں فرد کو تبدیل کرنا ہوگا - اگر ہمیں معاشرے کو بہتر بنانا مقصود ہے تو پھر فرد کو ایک نئی زندگی عطا کرنی ہوگی ۔ ۔ ۔ ۔ 

اشفاق احمد زاویہ 3 حقیقت اور ملا سائنسدان صفحہ 250