رزق

مولانا حافظ الدین نے اپنی کتابوں میں لکھا ہے  کہ آدمی کو چند خصلتیں چیتے سے سیکھنی چاہئیں  ان میں سے ایک خصلت یہ ہے کہ چیتا کتے کی طرح رزق کے پیچھے بھاگتا نہیں  اگر اس کے سامنے کوئی چیز میسر آجائے تو لے لیتا ہے ورنہ چھوڑ دیتا ہے ۔ 
دوسرے چیتا جب شکار کے لیے نکلتا ہے اگر شکار ہاتھ آجائے تو شکار کر لیتا ہے ،  لیکن اس کا پیچھا نہیں کرتا اور نہ ہی اس کے لیے بہت زیادہ دوڑتا ہے ۔ ۔ ۔ ۔ ۔  اسی طرح آدمی کو بھی چاہیے کہ ضرورت کے مطابق رزق طلب کرے ۔ 
نہ تو بہت زیادہ طلب کرے اور نہ ہی اس کے پیچھے مارا مارا پڑے ۔

اشفاق احمد بابا صاحبا صفحہ 304