موتیا

جب آپ نا خوش ہوتے ہیں ، ناراض اور ناساز ہوتے ہیں ۔ تو ہر شے دھندلی ہو جاتی ہے ۔ نہ باہر کا حسن نطر آتا ہے نہ اندر کا ۔ آوازیں مدھم پڑ جاتی ہیں ، خوشبوئیں ماند ہو جاتی ہیں ۔ بھوک ختم ہو جاتی ہے ۔ لمس ٹھنڈا پڑ جاتا ہے ۔ انسان اپنے آپ میں نہیں رہتا اور کا اور ہو جاتا ہے ۔  تم کو پتہ نہیں چلتا کہ خوف اور اکلاپا آپ کی ذات کے اندر آپ کی روح کو کیسے پژمردہ کر دیتے ہیں ۔ اور اس کی بصیرت پر موتیا اتر آتا ہے ۔

اشفاق احمد بابا صاحبا صفحہ 519