سیپیاں

انسانی ذہن ہمیشہ بطخ کی طرح تیرتا ہے ۔ نیچے اتھاہ گہرائیوں میں جو سیپیاں موتی ہوتے ہیں ، بطخ کو ان کو علم ہی نہیں ہو پاتا ۔

بانو قدسیہ مردِ ابریشم صفحہ 11