" عمرو عیار "

محبت ہمیشہ سفید لباس میں عمرو عیار ہے ۔ ہمیشہ دوراہوں پر لا کر کھڑا کر دیتی ہے ۔ اس کی راہ پر ہر جگہ راستہ دکھانے کو صلیب کا نشان گڑا ہوتا ہے ۔ محبت جھمیلوں میں کبھی فیصلہ کن سزا نہیں ہوتی ہمیشہ عمر قید ہوتی ہے ۔ محبت کا مزاج ہوا کی طرح ہے کہیں ٹکتا نہیں ۔ محبت میں بیک وقت جوڑنے اور توڑنے کی صلاحیت ہوتی ہے ۔ محبت ہر دن کے ساتھ اعادہ چاہتی ہے ۔ جب تک روز اس تصویر میں رنگ نہ بھرو تصویر فیڈ کرنے لگتی ہے ۔ روز سورج نہ چڑھے تو دن نہیں ہوتا ۔ جس روز محبت کا سورج طلوع نہ ہو تو اندھیرا ہی ہوتا ہے ۔
 بانو قدسیہ  " راجہ گدھ " سے اقتباس