" کند ذہن "

ہمارے بابا جی نور والے کہا کرتے تھے جس انسان کو ایسی حالت میں دیکھو  کہ وہ عام لوگوں کی طرح کا ذہن نہیں رکھتا یا کند ذہن ہے تو اسے بھول کر بھی پاگل نہ کہو ، اگر اس کی مدد نہیں کر سکتے یا اس کے ساتھ نیکی نہیں کر سکتے تو اس کے سامنے مت آؤ ۔ ایسے لوگوں سے ہمیشہ صلہ رحمی سے پیش آؤ ۔ یہ لوگ خدا کے بہت قریب ہوتے ہیں ۔ 

اشفاق احمد زاویہ 3  لچھے والا صفحہ 30