" شاہ منصور "



جب شاہ منصور کو سولی پر کھینچ دیا - جسم کو جلا دیا - خاکستر کو دریا ( دجلہ ) میں بہا دیا تو دریا جوش میں آگیا
لوگوں نے امام محمد کو خبر دی امام صاحب دجلہ کے کنارے آئے اور کہا !  منصور ہماری بات غور سے سن - ہم جانتے ہیں کہ تو طریقت میں سچا تھا ، لیکن ہمارا قلم بھی اگر خلاف شرع چلا ہو تو شہر غارت کر ورنہ تجھ سے کچھ نہ ہو سکے گا  اسی وقت دریا کا جوش ٹھنڈا ہوگیا ۔

اشفاق احمد بابا صاحبا صفحہ ٥٢٣