" حجلہ عروسی "

عورت کی کھوپڑی در اصل حجلہ عروسی ہے ۔ اس میں ہمیشہ ڈھولک بجتی ہے ۔ پھر کمبخت چاہتی ہے کہ اسے مردوں کے برابر حقوق دیے جائیں ۔ عورت پروفیسر ہو چاہے وکیل چاہے ملک کی ادیبہ ہو یا لیڈر اس کے دماغ میں ہمیشہ عشق و عاشقی ہی ٹھنی رہتی ہے ۔  

بانو قدسیہ دست بستہ صفحہ 13