" سنگلی "

خواتین و حضرات ! میں ، آپ ، لاہور میں بسنے والے اور سب انسان پوری کائنات میں ہر شخص اپنے سیلف کے بارے میں نہیں جانتا ہے اور سب نے اپنے ارد گرد چھوٹی تختیاں اور سائن بورڈ لٹکا رکھے ہیں ۔ کسی نے سنگلی ڈال کر اس تختی کو گلے میں ڈال رکھا ہے جس پر ذہین لکھا ہے ۔ کسی نے رائٹر ،کسی نے ماہرِ نفسیات ، کسی نے ڈاکٹر لکھوا رکھا ہے ۔ جب کہ انسان کی ذات کہیں نیچے چھپی ہوئی ہے ۔ 

اشفاق احمد زاویہ 3 وزڈم آف دی ایسٹ صفحہ 60