" ڈبلیو، ڈبلیو ، ایف "

ہمیں ایسا ہونا ہوگا جو مفکرِ پاکستان کہہ گئے 
ہو حلقہ یاراں تو بریشم کی طرح نرم 
رزمِ حق و باطل ہو تو فولاد ہے مومن 
لیکن ہم تو حلقہ یاراں میں فولاد سے زیادہ سخت بننے کے لیے کوشاں ہیں ۔ 
   ہمیں اپنے رویوں میں محبت اور نرم خوئی شفقت لانے کے لیے خود سے ہی ریسلنگ کرنی پڑی  گی ۔ اور اپنے وجود کے اندر ہی ڈبلیو ڈبلیو ایف جیسی صورتحال پیدا کرنی پڑی گی ۔ اپنی خواہشوں سے اپنے وجود اور روح کے اندر ہی ریسلنگ کرنا پڑے گی ، پھر کہیں جا کر ہمارے وجود اور چہرے پرسکون ہو پائیں گے ۔

اشفاق احمد زاویہ 3 رویوں کی تبدیلی صفحہ 26