" رو گردانی "

کاغذ پر دی ہوئی چیز اور لکھی ہوئی چیز اور کاغذ پر کیا ہوا دعویٰ انسان کا دعویٰ نہیں ہوتا ۔ وہ قابلِ اعتبار نہیں ہوتا اس سے پھسلا بھی جا سکتا ہے ۔ جب تک انسان اس دعوے یا وعدے پر اندر سے قائل نہیں ہوگا تب تک کاغذ پر کیے ہوئے وعدے ہیں تو ٹھیک ، تاریخی اعتبار سے لیکن ان سے پھسل جانے کا اندیشہ موجود رہتا ہے ۔
ماضی کی زندگی میں جتنے بھی جھگڑے انسانوں میں ہوتے رہے ہیں وہ سارے کہ سارے اس وجہ سے ہوئے کہ انہوں نے عہد سے رو گردانی کی اور وہ عہد سے پھر گئے ۔

اشفاق احمد زاویہ 3  پچاس برس پہلی کی دعا صفحہ 101